’انڈیا کا کشمیر میں پہلا پلاٹ‘، سری نگر میں مہاراشٹر بھون بنانے کا اعلان

مہاراشٹر نے انڈیا کے زیرانتظام کشمیر کی خصوصی آئینی حیثیت تبدیل ہونے کے بعد وہاں اڑھائی ایکڑ زمین خرید لی
ڈان ٹی وی رپورٹ
بڈگام :مہاراشٹر انڈیا کی وہ پہلی ریاست بن گئی ہے جس نے انڈیا کے زیرانتظام کشمیر کی خصوصی آئینی حیثیت تبدیل ہونے کے بعد وہاں اڑھائی ایکڑ زمین خرید لی ہے۔کشمیر میں کسی بھی انڈین ریاست کی ملکیتی یہ پہلی عمارت ہو گی جو سری نگر کے نواح میں تعمیر کی جائے گی۔ بدھ کو مہاراشڑ کی کابینہ نے اس زمین کی خریداری کی منظوری دی۔ ’مہاراشٹر بھون‘ سری نگر ایئرپورٹ کے قریب اچگام میں اڑھائی ایکڑ زمین پر تعمیر کیا جائے گا۔انڈین ایکسپریس کے مطابق ریاست مہاراشٹر کی حکومت سری نگر میں اپنے سیاحوں، یاتریوں اور ریاستی حکام کے لیے ’مہاراشڑ بھون‘ کے نام سے گیسٹ ہاؤسز بنا رہی ہے۔انڈیا کے زیرانتظام کشمیر (جو 5 اگست 2019 کے مرکزی حکومت کے اقدام کے بعد اب انڈیا کی یونین ٹیریٹری ہے) کی حکومت نے بھی اس زمین کی فروخت کی منظوری دے دی ہے۔کشمیر کے محکمہ ٹیکس نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ’بڈگام کے علاقے اچگام میں 20 کنال شاملات دیہہ اراضی ریاست مہاراشٹر کو آٹھ کروڑ 16 لاکھ روپے کے عوض منتقل کرنے کی منظوری دی گئی ہے۔‘بیان کے مطابق ’چالیس لاکھ آٹھ ہزار روپے فی کنال کے حساب سے فروخت ہونے والی اس زمین پر ’مہاراشٹر بھون‘ تعمیر کیا جائے گا۔‘

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں